Do you Like Story? 9
Summary rating from 11 user's marks. You can set own marks for this article - just click on stars above and press "Accept".
Accept
Summary 9.0 great

Ashir Azeem Story of CSS Officer

 

 

ان کا تعلق اقلیتی برادری سے تھا۔ دل میں وطن کی محبت اور خدمت کا بے پناہ جذبہ لیے وہ سی۔ ایس۔ ایس کا امتحان پاس کر کے کسٹم میں بطور ڈپٹی کلیکٹر بھرتی ہوئے۔ کچھ عرصہ کسٹم میں گزارنے کے بعد ادراک ہوا کہ کس طرح کسٹم کا صدیوں پراناسست سسٹم، جو کہ کرپٹ افیسران کے حق میں تھا، ملکی خزانے کونقصان پہنچا رہا ہے۔ چیرمین کسٹم کی درخواست پر اپنے چند ساتھیوں کی مددسے جدید ٹیکنالوجی اور عصری تقاضوں کے مطابق ایسا سسٹم تجویز کیا کہ جس کے فعال ہوتے ہی ادارے میں ایک انقلاب آگیا۔ وہ کام جو پہلے 12دنوں میں مکمل ہوتا اور جس کے لیے تاجروں کو اعلی افیسران کے ترلے کرنے پڑتے اور “تحفے تحائف” دینے پڑتے اب محض 4گھنٹوں میں اور بغیر کسی رشوت و سفارش کے ہونے لگا۔ ملکی خزانے کو بھی بے پناہ فائدہ پہنچا۔ مگر کسٹم میں موجود وہ رشوت خور افسران کہ جن کو اپنی منتیں ترلے کروانے اور تحفے تحائف لینے کی لت پڑ چکی تھی اس بات سے سخت ناخوش تھے۔ حکومتی سطح پر بھی اس قدم کو ناپسندیدگی کی نگاہ سے دیکھا جانے لگا اور بالآخر انہیں یہ سسٹم متعارف کرانے کی قیمت چکانی پڑی۔ انہیں ساتھیوں سمیت کرپشن کے بے بنیاد الزامات لگا کر معطل کردیا گیا۔ ایف۔ بی۔ آر اور نیب کا رخ ان کے گھروں کی طرف کر دیا گیا۔ ان کے نام ای۔ سی۔ ایل میں ڈال دیے گئے۔ بجلی کے بلوں سے لے کر بچوں کے سکول کی فیسوں تک ایک ایک چیز پر پوچھ گچھ کی گئی۔ کئی سال لگاتار ذہنی اذیت میں رکھا گیا۔ مگر ایک روپے کی کرپشن بھی ثابت نہ کی جاسکی۔ بلآخر مقدمات واپس لینے پڑگئے۔ ان کے ساتھی اس سب سے دل برداشتہ ہو کر ملک چھوڑکر چلے گئے مگر وہ پھر بھی ملک میں رہے۔ یہ بات کچھ بااثر لوگوں کو پسند نہ آئی تو ملک سے غداری اور سی۔ آئی۔ اے ایجنٹ ہونے کاالزام لگا کر ان کے پیچھے خفیہ اداروں کولگا دیا گیا۔ مگر یہاں بھی ان کرپٹ عناصر کو منہ کی کھانی پڑی۔ بالآخر ایک طویل عرصے تک اذیت دینے کے بعد کسٹم نے انہیں بحال کردیا۔ انہوں نے مزید اس ادارے کے لیے کام کرنے سے معذرت کی اور اپنے اوپر لگے تمام الزامات کاسامنہ کرنے کے بعد فیملی سمیت کینیڈا منتقل ہوگئے۔

یہ ہیں عاشر عظیم۔ پاکستان ڈرامہ انڈسٹری کی تاریخ کے شاہکار ڈرامہ سیریل “دھواں” کے رائٹر، ڈائریکٹر اور ایکٹر۔ کچھ عرصہ قبل ہی ان کی فلم “مالک” کے پاکستان بھر میں چرچے رہے مگر کیوں کہ وہ فلم بھی پاکستان کی کرپٹ اشرافیہ اور سیاست دانوں کے خلاف تھی اس لیے اسے بھی طرح طرح کی پابندیوں کاسامنہ کرنا پڑا۔ عاشر عظیم نے اپنی کل جمع پونجی اس فلم پر لگادی تھی جس کی وجہ سے ان کا تمام سرمایہ بھی ڈوب گیا۔ آجکل عاشر عظیم کینیڈا میں ٹرک چلا کر رزق حلال کما رہے ہیں

Ashir Azeem WITH FAMILY

Related posts

ٹھنڈیانی کی شام اور چوکیدار کا کمرہ

ٹھنڈیانی کی شام اور چوکیدار کا کمرہ

  کبھی کبھی کسی بہترین مقام کی نسبت کسی معمولی اور چھوٹی سی جگہ سے ہو جاتی ہے ہمارے ساتھ یہی ہوا تھا. ویک اینڈ تھا اور بائیک پر اسلام آباد سے ٹھنڈیانی جانے کا پروگرام بن گیا ہمارے پروگرام یونہی بن جاتے تھے. خیال آیا اور منہ اٹھا کر چل دئیے. دوسرے بائک پر صفدر ( بھائی) اور جاوید تھے...

Story of Friendship ,Spread Love

Story of Friendship ,Spread Love

      I noticed Zohra every now and then passing by our house to reach the langar ‘communal meal’. I felt sad every time I noticed her family eating by the roadside. A few days later, I was playing outside with my brother when she asked me if I can give her a glass of...

Story of Love Husband & wife

Story of Love Husband & wife

  "Our marriage lasted for 27 years and 2 months. She was sick. The gynaecologist was trying her best to save her life. But it was her time. I did not realize it while we were together but my whole world fell apart when she passed away. Spouses fight, and have arguments every second day...

Humans of Pakistan | Story of Signing Family

Humans of Pakistan | Story of Signing Family

  We are a "signing" family. Wasi was born to our family of deaf individuals - parents with deafness and three deaf brothers. As a result, at the time of his birth, we assumed he too was deaf. It was only after three years, when I read about his symptoms on the internet and...

Happy to be a mother of special child

Happy to be a mother of special child

  In May, 2015, my life was shaken upside down when I became mother of a 23 weeks premature baby boy weighing just 600 grams. The last 25 years of my life were not enough to prepare for what led ahead of me. My son stayed in hospital for a year before finally coming home for the first...

Story of Young Boy from Pakistan

Story of Young Boy from Pakistan

  My father is a daily wage laborer and does his best to keep our stove warm. To support him, I learned the skill of key-crafting from my relative, so that my father has one less mouth to feed. I come here everyday after school to work. I use the money I earn to support my family and...

Leave a Reply